Home / Book Review / اردو نامہ
اردو نامہ

اردو نامہ


نام  رسالہ: اردو نامہ

(شعبۂ اردو ،ممبئی کا اکیڈمک ریسرچ اینڈ ریفرنڈ جرنل)

مدیر:پروفیسر صاحب علی

اشاعت:اکتوبر 2015تا مارچ 2016

زیر اہتمام:شعبۂ اردو ،ممبئی یونیورسٹی،ممبئی


مبصر:محمد محسن رضا مصباحیؔ

ریسرچ اسکالرجواہر لعل نہرو یونیورسٹی،نئی دہلی

شعبہ اردو ممبئی یونیورسٹی سے شائع ہونے والا ششماہی رسالہ ’’اردو نامہ ‘‘ کاتازہ ترین شمارہ اکتوبرتا مارچ ، حاضر ہے ۔یہ رسالہ اپنے علمی ،فکری،تحقیقی و تنقیدی مضامین کی وجہ سے اردو کے علمی و ادبی رسائل و جرائد میں نمایاں مقام رکھتا ہے۔اردو کے سنجیدہ قارئین اور علمی حلقے میں اس رسالے کی روزافزوں مقبولیت وشہرت کا اندازہ رسالے کے مدیر پروفیسر صاحب علی کے تبصرہ نما اداریہ سے لگایا جا سکتا ہے جس میں انہوں نے مذکورہ رسالے کی مقبولیت کے اسباب و محرکات پر روشنی ڈالتے ہوے اس بات کا اعتراف کیاہےکہ’’ معیاری تحریروں کے قحط الر جال کے دور میں بھی اس رسالے کو مسلسل بر صغیر ہندوپاک کے ممتاز قلم کاروں کا تعاون حاصل رہاہے۔‘‘یہی وجہ ہے کہ ملکی اور بین الاقوامی سطح پر اس کے قارئین کا ایک قابل قدر حلقہ بن چکا ہے۔

زیر نظر رسالے کے مضامین و مقالات مختلف تحقیقی و تنقیدی موضوعات پر مشتمل ہیں۔بنیادی طور پر اس رسالے کو دو ابواب میں تقسیم کیا گیا ہے۔پہلا باب تحقیق کے عنوان سے ہے ۔اس کے تحت کل آٹھ تحقیقی مضامین ہیں ۔پہلا مضمون ’غالب کے بعض اشعار کی بازدید:شرح طباطبائی کے تناظر میں‘ پروفیسر یونس اگاسکر کا ہے ۔جس میں انہوں نے’ شرح طباطبائی کے تناظر میں‘غالب کے اشعار کی مختلف معنوی جہات سے پردہ اٹھانےکی کوشش کی ہے۔اس باب کا دوسر ا مضمون ’مراثی انیس میں دریا کے رنگ‘ پروفیسر انیس اشفاق کاہے۔ اس میں انہو ں نے مراثی انیس میں دریا کی مو جودگی پر خاطر خواہ بحث کیا ہے ، اور اس طرح انیس کے مرثیوں کا ایک انوکھا پہلو پیش کرنے کی کوشش کی ہے۔تیسرا مضمون ’ برار کا دبستان شاعری ‘ ہے ۔ جس میں ڈاکٹر محمد شرف الدین ساحل نے ریاست مہاراشٹر کا تاریخی علاقہ برار کی علمی و ادبی مرکزیت پر گفتگو کی ہے۔ اور برا ر کی دبستان شاعری سے قارئین کو متعارف کرانے کی کوشش کی ہے۔تحقیق کے باب کے تحت آنے والے دیگر مضامین میں پروفیسر سی۔سیدخلیل احمد کا ’ملناڈ اور اردو کے عوامی لوک گیت‘ ،پروفیسر شہناز نبی کا ’مغربی بنگال کے قدیم دینی رسائل‘ ،پرفیسر نسیم الدین فریس کا’گجری کے صوفی شعراکا کلام‘ ،ڈاکٹر اسد فیض کا ’نیرنگ خیال ‘ کا اولین شمارہ‘ ،ڈاکٹر قاضی حبیب احمد کا ’تمل ادب میں تانیثیت کے اولین نمونے‘ ہیں ۔ یہ تمام تحقیقی مضامین اپنے موضوعات کے تنوع اور معیار کے لحاظ سے قابل قدر اوراہمیت کے حامل ہیں۔

دوسرا باب تنقید کے عنوان سے ہے ۔ اس باب کے تحت کل گیارہ مضامین ہیں۔پہلا مضمون ’راجندر سنگھ بیدی کے افسانوں میں عورت‘ اردو ادب کے ممتاز نقاد پروفیسر علی احمد فاطمی کاہے۔ جس میں انہوں نے بیدی کے افسانوں میں عورت کے مختلف کرداروں کا مطالعہ پیش کیا ہے۔دوسرا مضمون ’انشااللہ خاں انشا کی سوانح‘کے تحت پروفیسر غیاث الدین نے مختلف الجہات شخصیت کے مالک انشا کی زندگی کے سوانحی گوشوں پر روشنی ڈالنے کی کوشش کی ہے۔اردو فکشن کے صاحب اسلوب اور ممتاز نقاد وارث علوی کی گراں قدر خدمات کااعتراف پروفیسر انور ظہیر نے اپنے مضمون ’وارث علو کی تنقیدنگاری‘ میں کیاہے۔اس رسالے کے بقیہ تمام تنقیدی مضامین بہت اہم اور قابل ذکر ہیں ۔بالخصوص ڈاکٹر ابو بکر عباد کا مقالہ’ ترقی پسند و ں کا پہلا درویش : خواجہ احمد عباس‘  بہت اہم ہے۔ جس میں مقالہ نگار نے خواجہ احمد عباس کو ایک نئی جہت سے دیکھنے کی کوشش کی ہے ۔اور ان کی تخلیقی جودت کے علاوہ ان کی طبیعت کی بے نیازی کو موضوع بناتے ہوے ان کی درویشی کو ثابت کرنے کی کوشش کی ہے۔اسی باب میں ایک اہم مضمون ڈاکٹر چمن آرا کا’ فراق کی شاعری: ایک جائزہ ‘ ہے ۔ جس میں فراق کی شاعری کا جائزہ لیتے ہوے اس کی مختلف فنی محاسن کو اجاگر کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

اردو نامہ ایک علمی وادبی رسالہ ہے ۔یہ رسالہ اپنے معیاری تحریروں اور اردو ادب کے مختلف موضوعات پر ممتاز قلم کاروں کے ذریعہ تحریر کردہ مضامین کی وجہ سے نمایاں مقام رکھتا ہے ۔اگریہ معیاری     رسالہ ششماہی کے بجاے سہ ماہی یا ماہنامہ ہو جائے تو اردو ادب سے دلچسپی اور شغف رکھنے  والوں کے لیے مزید کار آمد ہو سکتا ہے۔

مبصر:محمد محسن رضا مصباحیؔ

ریسرچ اسکالرجواہر لعل نہرو یونیورسٹی،نئی دہلی

mohsinrazajnu@gmail.com

About admin

Check Also

5

بچوں کے ادب میں ایک خوبصورت او ر منفرد اضافہ

بچوں کے ادب میں ایک خوبصورت او ر منفرد اضافہ  پروفیسر ڈاکٹر خواجہ اکرام شعبہ …

One comment

  1. سر ph.D مقالے کے لیے مجھے سید وارث علوی کے درجه ذیل کتابوں کی ضرورت هے
    1.اے پیارے لوگو!
    2.تیسرے درجے کا مسافر
    3.اوراق پارینه
    4.برژواژی برژواژی
    5.گنجفه باز خیال
    6.بت خانه چین
    7.غزل کا محبوب اور دوسرے مضامین…

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *